kitaab ghar ka logo






Don't Like Unicode ?  Read in Nastaleeq from Image Pages or Download the PDF File

 

Kitaabghar Blog:
Kitaabghar launched a Blog for discussion of urdu books available online on kitaabghar.com or any other website. Readers can also share views and reviews of books of their choice and promote their favourite writers. This is not limited to urdu books.



توہین رسالت: غیرت ایمانی کی آزمائش

 

کیا تہذیبوں کا تصادم ناگزیر ہی؟


 

لگ بھگ نصف صدی کی بات ہےکہ تیسری دنیا کےبہت سےدوسرےممالک کی طرح ترکی کےعلاوہ تمام عالم اسلام مغربی استعمار کےنوآبادیاتی قبضےمیں تھا۔ ہمیں یہ بات بہ خوبی سمجھ لینی چاہیےکہ استعمار سےجنگ کل بھی عقائد کی نہیں بلکہ وسائل پر قبضےکی تھی او رآج کےنیم نوآبادیاتی دور میں بھی ساری کشمکش وسائل پر براہ راست یا بالواسطہ قبضےکی ہی۔ مغربی استعمار نوآبادیاتی دور میں بھی مقامی اشرافیہ کو اپنا مطیع بنا کر ان ہی کےذریعےاپنےقبضےکو طول اور استحکام دیتا آیا ہی‘ ”آزادی“ کےبعد بھی وہ اپنےہی حاشیہ برداروں‘ بادشاہوں‘ فوجی آمروں کےذریعےمقامی وسائل کا استحصال کر رہا ہی۔ بہرحال ایک فرق دونوں صورتوں میں یہ واقع ہوا ہےکہ پہلےہم استعمار کےصرف غلام تھی‘ آقائوں کی مضبوطی کا سارا دارومدار غلاموں کی محنت پر ہوتا ہی‘ غلام اپنی آزادی کیلئےجدوجہد بھی کرتےہیں اور آقائوں کیلئےمسئلہ بنےرہتےہیں‘ اب ہمارا اور مغربی استعمار کا تعلق مولیٰ اور موالی کا ہی۔ ہم موالی اقوام استعمار کےدر پر پڑی رہتی ہیں‘ اس کی دی ہوئی بھیک اور ان کی خوشنودی پر ہمارا گزارہ ہوتا ہی‘ کسی بھی حکمران کی ”کامیابی“ کا معیار مغربی استعمار سےملنےوالی بھیک کی مقدر اور ان کی خوشنودی بن چکا ہی۔ وہ اگر نگاہیں پھیر لیں تو پھر ہمارا پوچھنےوالا کوئی نہیں ہی۔ ہمارا جیسا کچھ بھی نظام ہےوہ مزید درہم برہم ہو جاتا ہی۔ اس مولا اور موالی کےباہمی تعلق کو گلوبالائزیشن سےمزید تقویت مل رہی ہےجس میں ہمارےمارکیٹ اور وسائل باضابطہ طور پر مغربی استعمار کےقبضےمیں جا رہےہیں اور ہمارا انحصار ان کی بھیک اور خوشنودی پر روزبروز بڑھ رہا ہی۔
مغربی استعمار نےتیسری دنیا کو ”آزادی“ دیتےوقت ایک کام یہ کیاکہ وہ جاتےجاتےہر علاقےمیں سرحدوں اور اثاثوں کےبہت سےحل طلب مسائل چھوڑ گیا جو اب تک علاقائی تصادم کی وجہ اور بنیاد بنےہوئےہیں۔ اس کےنتیجےمیں اگر ایک طرف ان کےبنائےہوئےہتھیاروں کی سپلائی جاری رہی ہےاور ہمارےقومی وسائل جنگ کےمیدانوں میں برابر ہوتےرہےہیں تو دوسری جانب بیشتر ملکوں کی اندرونی سیاست میں مسلح افواج کو مرکزی حیثیت حاصل ہو گئی ہی۔ تیسری دنیا کےبہت سےملکوں میں مسلح افواج اور مغربی استعمار کا گٹھ جوڑ اور اس گٹھ جوڑ کےاطراف مقامی مفاد پرستوں کا اجتماع اسی علاقائی تصادم کی صورتحال کا نتیجہ ہی۔ تصادم کےباعث جنگی اخراجات میں اضافی بھی ہوئےجو بیرونی قرضوں سےپورےکیےگئی۔ رفتہ رفتہ ایک ایسی منزل آئی جہاں قرضوں کی ادائیگی پر ہونےوالےاخراجات دفاعی اخراجات سےبھی زیادہ ہو گئی۔ ایک بار پھر استعمار کی منت سماجت کرنی پڑی کہ قرضوں کو معاف کیا جائےیا ان کی ادائیگی موخر کی جائی۔ استعمار کی گرفت ملک‘ معیشت اور آزادی پر مزید سخت ہو گئی۔
”آزادی“ کےبعد کسی قسم کی روک ٹوک نہ ہونےاور اپنےضابطےاور قوانین خود ہی بنانےاور خود ہی توڑنےکےاختیار کےباعث حکمران طبقہ بالکل بےلگام ہو گیا۔ اب ان کا کام عوام کی کسی قسم کی خدمت کرنا نہیں بلکہ ان کو لوٹنا او رظلم کرنا تھا۔ حکومتوں کےادارےرفتہ رفتہ سماجی شعبےکی تمام تر ذمےداریوں‘ تعلیم‘ صحت حتیٰ کہ جرائم کی روک تھام اور امن عامہ کی ذمےداریوں سےبھی دستبردار ہوتےگئی۔ اس طرح ’بری اور عوام دشمن حکمرانی‘ کا ایک لامتناہی سلسلہ شروع ہو گیا جس سےباصلاحیت افرادی قوت کی ملک میں تیاری اور کھپ‘ قومی پیداوار میں فروغ‘ لوگوں کےمعیار‘ زندگی میں بہتری جیسےاہم ترین قومی معاملات پس پشت پڑتےچلےگئی۔
یہ تمام باتیں اپنی جگہ لیکن قدرتی وسائل اور افرادی قوت سےبھرپور اسلامی دنیا آگےکی جانب بڑھ رہی ہی۔

 

Go to Page:

*    *    *

tohin-e-risalat, sher angaiz mawad ki ashat, izhar ki azadi ya sher angezi, panja-e-yahood or europe, yahudioN ki sharartain, sazish ke muharrikat, maghrib ki islam mukhalifat, holocaust ka inkar, denark ka khaka, tahziboN ka tasadam, salibi jangoN ka naya silsila, shatim rasool ki saza or muafi, denmark ka boycott, jang, war, pyena round table conference, salahud din ayyubi, talash-e-aman, naqli qurran ki taqseem, pur tashaddud ahtajaj ke muashi muzimmarat, fikri pasmandgi ka shikar europian media

 

Download the PDF version for Offline Reading.(Downloads
(Visit DownloadArea)
)

(use right mouse button and choose "save target as" OR "save link as")

A PDF Reader Software (Acrobat OR Foxit PDF Reader) is needed for view and read these Digital PDF E-Books.

Click on the image below to download Adobe Acrobat Reader 5.0




Jannat Kay Pattay A Socio Romantic Urdu Novel by Women Digest Writer & Novelist Nemrah Ahmed Tum Akhri Jazeera Ho Social Romantic Novel by Amna Riaz Lards Spy Action Adventure Imran Series Novel by Mazhar Kaleem MA Tum Ho Mera Asman Urdu Romantic Novel by Shama Hafeez Socio Romantic Urdu Novel Ayada e Jaan Guzarishat by Ushna Kausar Sardar

[ Link Us ]      [ Contact Us ]      [ FAQs ]      [ Home ]      [ Forum ]      [ Search ]      [ About Us ]


Site Designed in Grey Scale (B & W Theme)